Urdu/اردو

This is just a test to see if I can make this weblog bilingual with entries in both English and Urdu . Don’t worry this weblog will still be mostly in English. Urdu is my first language but this is my first time typing in Urdu…

اردو زبان میں بلاگ

This is just a test to see if I can make this weblog bilingual with entries in both English and Urdu (اردو). Don’t worry this weblog will still be mostly in English. Urdu is my first language but this is my first time typing in Urdu.

There are quite a few things I need help with.

  • First of all, if you notice any problems like gibberish or misaligned text etc. please let me know.
    • UPDATE: RSS feeds have misaligned text because of the right-to-left issue. I have no idea how to fix that. Is there anyone who knows more about RSS who can help?
  • If anyone knows a better way to write Urdu unicode than to try each key on the keyboard to find the appropriate character, please let me know. The OS I am using is Windows XP.
    • UPDATE: This is still my biggest problem.
  • When I publish my entry, the Urdu characters change to the unicode HTML entities in the edit screen. That makes the editing of Urdu posts very difficult. Is there a solution to that? Please note that I am using Textile 2 formatting and have set the character set for my weblog to be UTF-8.
    • UPDATE: Fixed by setting NoHTMLEntities to 1 in mt.cfg. Will that cause any other problems? Ampersand, smart quotes, em dashes etc.?
  • Right now, I am using <p style="text-align: right"> to align the Urdu text to the right (since it’s written from right to left). Is there a better way? How would I put that in CSS? Also, what if I want an Urdu word in the middle of a paragraph in English or vice versa?
    • UPDATE: I have created an urdu class in my CSS and use p[ur](urdu). using MT Textile. I still do want to make it simpler. Also, I am using %[ur]Some Urdu words% for Urdu text within an English paragraph. I need to create similar stuff for English as well.
  • Also, which fonts can I use for Urdu? Which ones are better looking? Which ones are more likely to be installed on my readers’ machines?
  • See how the commenter names in Urdu are misaligned with the numbers and the brackets. Is there any solution to that?
    • UPDATE: Fixed. It was being caused by the text direction issue. The brackets had an ambiguous direction. They could be left to right if in English text or right to left if in Urdu text. Since the brackets came at the boundary of the change in language, they were somehow being interpreted as in right to left direction. I fixed it by putting <span dir="ltr"></span> around them in the template.

Umair, you are the pioneer in Urdu weblogs. I need your help here.

Author: Zack

Dad, gadget guy, bookworm, political animal, global nomad, cyclist, hiker, tennis player, photographer

167 thoughts on “Urdu/اردو”

  1. this website is a fucking poor website u pakistani’s are nothing but fucking money lovers and liars

  2. یہ ٹیکسٹ ایڈیٹر کیا ھوتا ہے اور اس کا کیا کام ھوتا یے؟ دوسری بات یہ کہ مجھے یہ پرابلم ہے کہ اردو ٹایٔپ کرتے ہوۓٰ کامہ اور ایکسکلیمیشن مارک ٹایٔپ کرنے کی کوشش کروں تو تو وہ بایٔں کی بجاۓ دایٔں طرف ٹایٔپ ھو جاتا ہے۔ ع۔ یے کویٔ علاج اس کا اے چارہ گراں کہ نہیں

  3. وکیپیڈیا سے
    بلیک واٹر

    زی یا بلیک واٹر کا نیا شارہ (لوگو)
    زی (Xe ) یا ایکس ای یا زی سروسز ایل ایل سی (Xe Services LLC ) جس کے پرانے نام بلیک واٹر یا بلیک واٹر ورلڈ وائڈ یا بلیک واٹر یو ایس اے تھے، نجی شعبہ کی ایک فوج ہے جو ریاستہائے متحدہ امریکہ میں 1997ء میں وجود میں آئی۔ یہ بلیک واٹر کے نام سے مشہور ہے۔ اب اس کا نام بدل کر زی یا ایکس ای رکھا گیا ہے۔ 1997ء میں اس کا نام بلیک واٹر یو ایس اے تھا جو اکتوبر 2007ء میں بدل کر بلیک واٹر ورلڈ وائڈ رکھا گیا۔ یہ عراق جنگ کی ایک بدنام تنظیم ہے جس نے عراق میں فلوجہ، نجف اور بغداد میں غیر قانونی طور پر عام افراد کو قتل کیا جس کا مقدمہ آج کل ریاستہائے متحدہ امریکہ میں زیرِ سماعت ہے۔ بظاہر اس کا مقصد امریکی سفارت کاروں اور دیگر افراد کا تحفظ ہے مگر تیسری دنیا اور ترقی یافتہ دنیا کے مختلف دانشوروں کے مطابق یہ تنظیم ایسے کاموں میں استعمال ہوتی ہے جو ریاستہائے متحدہ امریکہ قانونی وجوہات سے خود نہیں کرنا چاہتا۔ 29 اکتوبر 2007ء کو امریکی شعبۂ ریاست (ڈیپارٹمنٹ آف سٹیٹ) نے اس تنظیم کو کسی بھی عدالت میں لانے سے استثناء کر دیا تاکہ اس پر کوئی مقدمہ کامیاب نہ ہو سکے۔ 19 اگست 2009ء کو نیویارک ٹائمز میں مارک مانزیتی نے لکھا کہ سی آئی اے نے زی کی خدمات حاصل کی ہیں تاکہ القاعدہ کے افراد کو دنیا کے مختلف حصوں میں قتل کیا جائے۔ [1]۔ البتہ ریاستہائے متحدہ امریکہ کی حکومت کسی ایسے تعلق سے انکار کرتی ہے اور بلیک

    واٹر کو ایک نجی شعبہ کا ادارہ سمجھتی ہے۔

    زی (بلیک واٹر) کی پاکستان میں سرگرمیاں

    زی یا بلیک واٹر کی سرگرمیاں پاکستان میں مشکوک ہیں۔ اخبارات و جرائد متواتر ایسے واقعات بیان کر رہے ہیں جس میں زی یا بلیک واٹر ملوث ہے مگر امریکی سفارت خانے اور پاکستان کی سرکاری سطح پر ان کی پاکستان میں موجودگی کو تسلیم نہیں کیا جاتا۔ اگرچہ امریکی سفارت خانے نے تسلیم کیا کہ انہوں نے 200 گھر اسلام آباد میں کرایے پر لے رکھے ہیں اور سفارت خانہ میں ایسی توسیع ہو رہی ہے جس کی ماضی میں نظیر نہیں ملتی [4] مگر سفارت خانہ وہ حکومت پاکستان اس بات کو بلیک واٹر یا زی سے علیحدہ سمجھتے ہیں۔ چین کے سفیر نے بھی اس پر تشویش کا اظہار کیا ہے مگر وزیراعظم پاکستان نے کہا ہے کہ ہم چین کی تشویش دور کریں گے۔[5] اس تنظیم کے مسلح امریکی افراد اسلام آباد میں کھلے عام گھومتے ہیں جن کا ٹریفک پولیس نے 6 ستمبر 2009ء کو تیز رفتاری کی بنیاد پر چالان بھی کیا۔ اس کانسٹیبل کا کہنا تھا کہ تھانے جاکر تو ان امریکیوں کو چھڑا لیا جاتا ہے اس لیے وہ یہیں ان کا چالان کرے گا۔ ان مسلح افراد نے اردگرد کھڑے عوام سے ڈر کر یہ چالان کروا لیا۔ [6]۔ ایک اور واقعہ میں چار امریکی افراد کو کالے شیشوں کی جیپ میں آٹومیٹک ہتھیاروں سمیت ایک ناکے پر روکا گیا تو انہوں نے اپنا تعارف بلیک واٹر کے تعلق سے کروایا۔ جب انہیں تھانے لے جایا گیا تو وہاں امریکی سفارت خانے کے افراد پہنچ گئے جن کے ساتھ فوج کے ایک کیپٹن اور پولیس کے ایک ایس پی آفتاب ناصر تھے جنہوں نے پولیس والوں کو ڈرا دھمکا کر ان چاروں کو رہا کروالیا۔ [7] ایسی اطلاعات بھی ہیں کہ زی پاکستان کے چھ شہروں میں ڈیرہ ڈالنے لگی ہے۔ [8] امریکی اخبار نیویارک ٹائمز کے مطابق زی کے اہلکار امریکی سی آئی اے کے اہلکاروں کی جگہ پاکستان اور افغانستان میں موجودہ خفیہ اڈوں پر ڈرون طیاروں پر ’ہیل فائر‘ میزائل اور پانچ سو پونڈ وزنی لیز گائیڈڈ میزائل لگانے کا کام کرتے رہے ہیں۔ یہ کام ماضی میں سی آئی اے کے اپنے ماہر انجام دیتے تھے۔[9]۔ امریکی سفارت خانے نے کہا ہے کہ اس قسم کی کہانیوں میں کوئی حقیقت نہیں اور نہ تو ہزار میرینز پاکستان آ رہے ہیں اور نہ ہی زی یا بلیک واٹر پاکستان میں کوئی کام کر رہی ہے۔ [10]

    شرعی حیثیت
    پاکستان کے سیاسی و مذہبی رہنماء مولانا فضل الرحمٰن نے فتویٰ دیا ہے کہ چونکہ یہ تنظیم ایک قاتلوں کا گروہ (ڈیتھ سکواڈ) ہے اس لیے اس میں شامل ہونا اور اس کے لیے کام کرنا شرعاً حرام ہے۔

  4. @Bunke
    Urdu domain names will be great, but until we have better Unicode support in PHP and other web and computer technology, Unicode domain names would not be good enough. For example, those URLs will be url-encoded by a lot of systems and thus look like a long string with no meaning. I hate those.

  5. How can I get an urder font in MS Word. If this is not possible, please advise me how of any urdu software in “Nastaliq.”

  6. hey…i am studying urdu litrature at universuty…i was aondering if u can help me in expanding ur language in iran …. we r gonna start a weblog in urdu with my classmates …. i have some problems with that….i do appreciate if u can help us!

  7. Wikipedia ka unwaan to “Free encyclopedia” hai lekin ye sirf aur sirf aik makhsoos soch ki hi numaindagi karta hai aur azad bikul bhi nahin hai. Agar aam shakhs iss main koi tarmeem kare ya koi naya mazmoon likhe to khufia taqaton ke agent foran uss ko zail kar dete hain aur tehreer ko wapas apni purani likhi hoi shakal main bahal kar dete hain, iss baat se qata nazar ke wo kitni mustanad tarmeem thi. Agar tehreer unn ki marzi ki nahin to ghair mustanad qarar dekar foran uss ka qala qama kar dia jata hai. Wikipedia ko dunia ki aankhon main dhool jhonkne ke liye istemal kia jata hai khas tor par musalamano ke, aur ye website dunia ko warghalane ka kaam ilm ki aar lekar ba khoobi kar raha hai. Iss liye meri tamam zishaoor aur haqiqat pasand logon se ye darkhwast hai ke Wikipedia main di gai maloomaat par bharosa na karen aur asal main azad zarae ko apne ilm ka sarchishma banaen, warna gumrahi aap ka muqadar ban jaye gi, kunke taghooti quwaten iss ko azad ka naam dekar baghair kisi zimmedari ke logon ke samne ghalat maloomat pesh kar rahi hain, aur bari asani se iss agende ko takmeel tak pohnchana rahi hain

  8. Salam.. good effort and very nice article. i was searching for some good articles and some good URDU websites, suddenly i found very unique kind of WEBSITE and that is http://www.urdudigest.pk i found that that is one of the best urdu website i have ever seen. the outlook, articles, stories, font.. everything. you must visit and check out.. i think that is new one but awesome.

Comments are closed.