A Date That Will Live In Infamy

Someone once said that today is the date that will live in infamy. It does, but may be the reasons are different from what he envisaged.

Franklin Delano Roosevelt, the 32nd President of the United States, said that about today. The question is how did he know about three decades in advance that the date was going to be so important. Coincidentally, the small event that led FDR to make that speech also happened a little after 11, Pakistan Standard Time. Of course, there’s the issue of AM and PM there. The minor incident happened at 11pm of what would years later become Pakistan time (8am Hawaii time) while the infamous incident 3 decades later happened at 11:15am Pakistan time, which is about the same time as right now.

That fateful day was an election day in Pakistan, elections which had been postponed due to floods; elections that were the first real and proper elections in the 23 year old Pakistan; elections which led to an army operation, massacres and the creation of Bangladesh, but more on that later in 9 days. Right now, we must focus on today’s date because even those historic elections were not the reason for the date’s infamy.

No, it wasn’t even the Indonesian invasion of East Timor or the birth of Leopold Kronecker or Noam Chomsky or the death of Wolfgang Paul.

It was closer to home and much more important. And today, in honor of that date that will live in infamy, the Kid wants me to have lots of toys to play with.

Gary Farber Needs Help

Gary Farber of Amygdala needs some help. Please go to his blog and donate. Thanks!

Gary Farber, of the weblog Amygdala, has been blogging for almost 6 years and I think I have been reading him for almost as long. His blog, when he’s blogging, is indispensable. However, he hasn’t been well lately and thus hasn’t been blogging much.

Because of his medical problems, he needs our help. If you can, please give him some donations. What are you waiting for, go over to his blog and donate now!

Best of luck, Gary and please get that blog going again soon!

خدا کے لئے

شعیب منصور کی فلم خدا کے لئے میں میری کی زبردستی شادی اور حبسِ بےجا نے مجھے سب سے متاثر کیا۔ لالی‌وڈ کی عام فلموں سے بہت مختلف یہ ایک اچھی فلم ہے اور دیکھنے سے تعلق رکھتی ہے۔

آخر فلم خدا کے لئے دیکھی۔ اچھی فلم ہے۔

فلم کے متعلق تمام تبصرے موسیقی اور اسلام پر ہی پڑھے اور اس سے زیادہ بیکار بحث نہیں دیکھی۔ مگر فلم کا سب سے پراثر حصہ اس برطانوی پاکستانی لڑکی سے متعلق ہے جس کی زبردستی شادی کر دی جاتی ہے۔

مجھے اس بات پر بھی کافی دکھ ہوا کہ موسیقی کی ممانعت سے متعلق تو لوگوں نے اتنا چور مچایا مگر کسی نے یہ ذکر بھی نہیں کیا کہ فلم کے دوسرے مولوی صاحب زبردستی کی شادی کو بھی درست قرار دیتے ہیں۔

پاکستانی فلموں کی نسبت بہت بہتر فلم ہے اور دیکھنے سے تعلق رکھتی ہے۔ مگر اس میں کچھ خامیاں بھی ہیں۔ ایک تو ایمان علی کو برطانوی پاکستانی کا رول دیا گیا ہے مگر اس کا لہجہ بالکل بھی برطانوی نہیں۔ دوسرے فلم میں کئی لیکچر نما ڈائیلاگ ہیں۔

فلم میں سب سے متاثرکن حصہ ایک برطانوی پاکستانی کی زبردستی شادی اور پھر قبائلی علاقے میں اپنے “شوہر” کے ہاتھوں قید میں رہنا ہے۔ زبردستی کی شادی واقعی ایک مسئلہ ہے اور کچھ بیرون ملک رہنے والے پاکستانی بھی اس میں ملوث ہیں۔

فلم کا کمزورترین حصہ امریکہ والا ہے۔ شان موسیقی کی اعلٰی تعلیم کے لئے امریکہ آتا ہے اور وہاں آسٹن میری سیئر سے محبت اور شادی کر لیتا ہے۔ مگر ان میں محبت ہونے کا عمل کچھ ایسا پیش نہیں کیا گیا کہ سامعین اسے قابلِ یقین سمجھیں۔

پھر شان کو امریکی پولیس پکڑ لیتی ہے اور اس پر دہشت‌گرد ہونے کا الزام لگا کر تشدد کا نشانہ بناتی ہے۔ یہاں بھی معاملات گوانتامو بے اور ابوغریب سے نقل کئے گئے ہیں جو غلط نہیں۔ مگر اس سے یہ غلط تاثر ملتا ہے کہ امریکہ میں موجود پاکستانی یا مسلمان طلباء کے ساتھ ایسا کچھ سلوگ ستمبر 11 کے بعد ہوا تھا۔ اس وقت سینکڑوں لوگ پکڑے گئے جنہوں نے کسی قسم کی امیگریشن کے قوانین کی خلاف‌ورزی کی تھی اور انہیں مہینوں جیل میں رکھا گیا جہاں انہیں کچھ مارا پیٹا بھی گیا اور بعد میں زیادہ‌تر کو قوانین کی خلاف‌ورزی کی بنیاد پر ملک سے نکال دیا گیا۔ اس بارے میں امریکی حکومت اور دوسرے ادارے تحقیق کر چکے ہیں اور شاید میں بھی اس پر اپنے بلاگ پر لکھ چکا ہوں۔ بہرحال جیسے فلم میں شان پر شدید تشدد کیا گیا ویسا کوئی واقعہ نہیں ہوا۔

فلم کی موسیقی بھی سننے سے تعلق رکھتی ہے۔

میں اس فلم کو 10 میں سے 7 نمبر دیتا ہوں۔

Thirteen

Are you afraid of Thirteeen? Is it better or worse than Seven? What happened 13 years ago today? Find out at my blog!

It’s been 13 years. Thirteen is almost twice as long as seven. Seven reminds me of The Seven Year Itch. Yes, the seven year itch is real, it exists, it happens. No, I am not going to tell you all the juicy details!

Thirteen also reminds me of The Thirteenth Floor. Are we really a simulation within a simulation?

By now you must be wondering what the fuss is all about? Wonder no more! On December 1, 1994, in Wah Cantt, Pakistan, Amber and I tied the knot.

I asked Amber yesterday that given the chance would she do it all over again? And she said yes. I also asked her if she wanted to spend 4*13=52 more years with me and she does! I guess we can call this marriage a success.